182

گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول بلی ٹنگ ہار کر بھی کھیل کے میدان کا بادشاہ بن گیا

گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول بلی ٹنگ ہار کر بھی کھیل کے میدان کا بادشاہ بن گیا

حالیہ انٹر سکولز ٹورنامنٹ میں گورنمنٹ ہائیر سیکنڈری سکول بلی ٹنگ نے سب سے زیادہ پوائنٹس حاصل کر کے جنرل ٹرافی حاصل کر لی لیکن حیرت کی بات یہ ہے کہ بلی ٹنگ سکول میجر اور مائنر کسی بھی گیم میں ڈسٹرکٹ فائنل تک بھی رسائی حاصل نہ کرسکا اور ایونٹ کے سب سے بڑے ٹائٹل کو حاصل کر گیا۔ یہ سب جماعت ہشتم کے طالبعلم محمد یسین اورکزئی کا کارنامہ ٹھہرا۔
فطری خداداد صلاحیتوں کے مالک محمد یسین نے اتھلیٹکس میں پے در پے کامیابیاں حاصل کر کے نہ صرف اپنے سکول بلکہ ضلع کے سب سے بہترین اتھلیٹ کا اعزاز حاصل کیا اور ان کی شاندار پرفارمنس سے نہ صرف ان کی مادر علمی گورنمنٹ ہائیر سکینڈری سکول بلی ٹنگ نے تاریخ میں پہلی دفعہ جنرل ٹرافی کا ٹائٹل حاصل کیا بلکہ کھیلوں سے تعلق رکھنے والے پر دلعزیز مہمان خصوصی مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش صاحب بھی سٹیج پر انہیں ٹرافی دیتے وقت سرایت بغیر نہ رہ سکے اور پوچھ بیٹھے کہ تمام گیمز آپ ہی نے جیتی ہیں کسی دوسرے کو بھی موقع دیا ہوتا تو محمد یسین معصومیت سے مسکرا دیے۔ واضح رہے کہ ان کی مسلسل کامیابیوں پر تقریبا 10 سکولوں نے ان پر اعتراض بھی کیا اور جیوری کمیٹی نے طالبعلم کی تمام سکول اور بورڈ دستاویزات کے معائنے اور تفصیلی انٹرویو کے بعد انہیں کلئیر قرار دیا۔ محمد یسین نے اپنی کامیابی محض اللہ تعالی کے فضل اپنے اساتذہ طارق جاوید اور ناصر خان کی حوصلہ افزائی کی مرہون منت قرار دی۔ محمد یسین جیسے طلبہ ملک و قوم کا سرمایہ ہوتے ہیں اور وقت کی ضرورت ہے کہ ان کی مناسب سرپرستی ہو تاکہ کوہاٹ کے میدانوں میں چمکنے والا یہ نوعمر ستارہ اولمپکس کے میدانوں میں پاکستان کے گرین یونیفارم میں اپنی آب و تاب دکھاتا نظر آئے.

شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں