206

گندے نالوں کے پانی سے سیراب کر نے پر 13 ایکڑ پر زیر کاشت سبزیاں تلف

ضلعی انتظامیہ پشاور نے کاروائی کر تے ہوئے آلودہ اور گندے نالوں کے پانی سے سیراب کرنے پر 13 ایکڑپر زیر کاشت سبزیاں تلف کر دیں۔ تفصیلات کے مطابق وزیر آعلی خیبر پختونخوا اور چیف سیکریٹری خیبر پختونخوا کو عوامی شکایات موصول ہو رہی تھیں کہ اکثر علاقوں میں کاشتکار گندے نالوں کے پانی سے سبزیاں اور دیگر فصلیں کاشت کر رہے ہیں جس کی وجہ سے بیماریاں پھیل رہی ہیں جس پر انھوں نے ضلعی انتظامیہ پشاور کو کاروائی کا حکم دیا۔

اس حوالے سے کمشنر پشاور ڈویژن امجد علی خان اور ڈپٹی کمشنر پشاور محمد علی اصغر کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر (شاہ عالم) ڈاکٹر احتشام الحق اور اسسٹنٹ کمشنر (متنی)رضوانہ ڈارنے محکمہ زراعت کے افسران کے ہمراہ پشاور کے نواحی علاقوں میں کاروائی کر تے ہوئے آلودہ اور گندے نالوں سے سبزیاں سیراب کر نے پر 13 ایکڑ پر زیر کاشت سبزیوں کو تلف کر دیا۔

ڈپٹی کمشنر پشاور نے پشاور کے تمام کاشت کاروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ گندے نالوں کے پانی سے سبزیاں و دیگر فصلیں کاشت نہ کریں کیوں کہ اس سے بیماریاں پھیل رہی ہیں بصورت دیگر قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ انھوں نے اسسٹنٹ کمشنروں کو اپنے علاقوں میں گندے نالوں کے پانی سے سیراب کرنے والے کاشت کاروں کے خلاف کاروائی کی ہدایت کی ہے۔

شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں