110

مہنگائی کے جن کا جادو منتر کوہاٹ بورڈ پر بھی اثر انداز

مہنگائی کے جن کا جادو منتر کوہاٹ بورڈ پر بھی اثر انداز

حکومت پاکستان کے دیگر اداروں کے دیکھا دیکھی تعلیمی بورڈ نے بھی مہنگائی کا منتر پڑھنا شروع کر دیا ہے۔ کوہاٹ تعلیمی بورڈ میں ایک پرچہ کینسل کرنے کے پچھلے برس تک مبلغ پانچ سو روپے لیا جاتا تھا لیکن اب جب عمران خان نے مہنگائی کے جن کو بوتل سے آذاد کر لیا ہے اور اس جن نے یکے بعد دیگرے پورے پاکستان کو اپنے لپیٹ میں لے لیا ہے تو بھلا کیسے ممکن تھا کہ کوہاٹ تعلیمی بورڈ اس جن کے جادو سے بچ جاتا۔ امسال کوہاٹ تعلیمی بورڈ نے فی پرچہ کینسل کرنے کے پانچ سو روپے کی بجائے پندرہ سو روپے مقرر کیے ہیں یعنی کے دو سو فیصد اضافہ کر دیا ہے۔ نئے فیس شیڈول کو دیکھ کر بہت سے طلباء کم وسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنا حق مانگنے سے بھی محروم ہونے لگے ہیں۔ نئے پاکستان میں معاشیت کو کنٹرول کرنے کی اشد ضرورت ہے ورنہ عوام پچھلے حکمرانوں کو ہی بہتر سمجھے گی۔ کیا کوہاٹ بورڈ کے اس فیصلے کو روکا جائے گا یا پھر جوں کا توں رہنے دیا جائے گا۔ غریب عوام و طلباء کا مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ اس معاملے کا نوٹس لے کر فی الفور فیس شیڈول تبدیل کیا جائے۔

شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں