140

تعلیمی ایمرجنسی سیاسی بیانات کی نظر، ایف آر کوہاٹ کے علاقہ جواکی کا واحد ہائی سکول خستہ حالی کا شکار

تعلیمی ایمرجنسی سیاسی بیانات کی نظر، ایف آر کوہاٹ کے علاقہ جواکی کا واحد ہائی سکول خستہ حالی کا شکار

تعلیمی ایمرجنسی نافذ کرنے والی حکومت میں ایک اور واحد ہائی سکول نظر انداز ہو رہا ہے جس کی وجہ سے سکول خستہ حالی کا شکار ہو چکا ہے۔ ساجد خان آفریدی کے مطابق سابقہ فاٹا جواکی ایف آر کوہاٹ کا واحد ہائی سکول ہے۔ گورنمنٹ ترکی اسماعیل خیل جو 2010 سے اس خستہ حالی کا شکار ہے اس سکول میں 500 سے زیادہ بچے پڑھتے ہیں۔ جبکہ یہ بات قابل ذکر ہے کہ اب بھی یہاں طلباء پڑھنے آتے ہیں۔ واضح رہے اس سے قبل سابقہ مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش تھے لیکن اس سکول پر ان کی بھی نظر کرم نہیں پڑی۔عوام الناس نے اعلیٰ حکام، صوبائی مشیر تعلیم اکبر ایوب، وفاقی وزیر برائے انسداد منشیات شہریار آفریدی اور صوبائی مشیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی ضیاء اللہ بنگش سے اپیل کرتے ہیں کہ تعلیم ہمارا بنیادی حق ہے اور اس کے تحت اس سکول کی مرمتی کے کام کے لیے جلد از جلد لائحہ عمل طے کرے۔

شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں